Plan Chudai Ka

ہیلو دوستو میرا نام ندیم ہے اور میری عمر 30 سال کے قریب ہے میری ایک سال پہلے میری کزن (چچا کی بیٹی )رابعہ سے شادی ہوئی رابعہ کی عمر اس وقت 23 سال کے قریب ہے اور وہ انتہائی خوب صورت ہے اس کا جسم سمارٹ قد 5 فٹ 5 انچ‘ رنگ گورا‘ ممے 36 سائز کے‘ بال گھنے کالے اور لمبے‘ آنکھیں براﺅن اور رنگ گورا ہے ہماری منگنی بچپن میں ہی ہمارے والدین نے طے کردی تھی میرا تعلق سیالکوٹ سے ہے جبکہ میں جاب کے سلسلہ میں گذشتہ 4 سال سے لاہور میں مقیم ہوں سیالکوٹ میں ہماری جوائنٹ فیملی ہے جہاں میرے چچا‘ تایا اور ہماری فیملی اکٹھی رہتی ہیں میں جب بھی چھٹی کے لئے سیالکوٹ جاتا رابعہ کو دیکھ دیکھ کر میرے دل میں عجیب عجیب سے خیالات آتے رہتے تھے شادی کے 4 مہینے بعد ہی اپنے گھر والوں کے اصرار پر میں اپنی بیوی کو لے کر لاہور شفٹ ہوگیا جہاں ہم لوگ ایک پوش ایریا میں ایک فلیٹ میں رہتے ہیں مجھے مختلف انٹر نیٹ سائٹس پر سیکس سٹوریز پڑھنے کا بہت پہلے سے شوق ہے جن کو پڑھ کر میرے ذہن میں کئی خیالات پیدا ہوتے تھے لاہور شفٹ ہونے کے بعد ہفتہ میں تقریباً ایک دو بار ہم لوگ باہر سے کھانا کھاتے اور اکثر آﺅٹنگ کے لئے شام کے وقت کسی پارک میں چلے جاتے تھے جہاں لوگ رابعہ کو دیکھ کر منہ سے رالیں چھوڑنے لگتے تھے جبکہ رابعہ بھی گھر سے باہر نکلتے ہوئے جان بوجھ کر ایسے کپڑے پہنتی ہے جن کو دیکھ کر لوگ اس کی طرف اٹریکٹ ہوں پہلے پہل تو میں اس کی ان حرکات سے کافی پریشان ہوتا اور مجھے غصہ بھی آتا تھا لیکن وقت کے ساتھ ساتھ حالات تبدیل ہوگئے اور اب مجھے غصے کی بجائے مزہ آنے لگا ہے اور میں سیکسی سٹوریز کی طرح اپنی بیوی کو خیالات میں دوسرے مردوں سے چدتے ہوئے دیکھنے لگا تاہم میں نے اس بارے میں اپنی بیوی سے کبھی بھی بات نہیں کی میں جب بھی اپی بیوی سے ہم بستری کرتا ذہن میں یہی خیال کرتا کہ اس کے ساتھ کوئی مرد سیکس کررہا ہے اب میرے ذہن میں خواہش پیدا ہوئی کہ میں اپنی بیوی کو کسی اور مرد کے ساتھ سیکس کرتے دیکھوں لیکن مجھ میں اتنی ہمت نہیں تھی کہ میں اپنی بیوی سے اس حوالے سے بات کرسکوں دو ماہ قبل میں نے اس بارے میں باقاعدہ پلان بناناشروع کردیا کہ اس خیال کو حقیقت کا رنگ کس طرح دیا جاسکتا ہے یہاں یہ بات بھی میں آپ کو بتانا ضروری سمجھوں گا کہ میں رابی(رابعہ کا نک نیم) سے بہت محبت کرتا ہوں اور اس دوران میرے ذہن میں یہ خیال بھی آیا کہ مجھے ایسا نہیں کرنا چاہئے اس کے ساتھ کوئی دوسرا مرد سیکس کرے گا تو یہ اچھا نہیں ہوگا جس کے بعد میں نے سوچا کہ مجھے اپنی بیوی کو کسی دوسرے مرد کے ساتھ ضرور دیکھنا ہے لیکن اب میں نے اپنی سوچ بدل لی اور فیصلہ کیا کہ اب رابی کو کسی دوسرے مرد کے ساتھ صرف سافٹ سیکس کرتے دیکھوں گا باقاعدہ سیکس کرتے ہوئے نہیں جس پر میں نے پلان بناناشروع کردیا میں لاہور میں ایک ملٹی نیشنل کمپنی میں مارکیٹنگ مینجر کے طورپر کام کرتا ہوں اور میرے ساتھ ایک لڑکا عادل میرے ماتحت کام کرتا ہے جو اسی بلڈنگ میں رہتا ہے جس میں میں رہتا ہوں اور ہم لوگ آفس بھی اکٹھے ہی جاتے ہیں اور واپس بھی اکٹھے ہی آتے ہیں عادل یہاں اس فلیٹ میں اکیلا ہی رہتا ہے اور ساہیوال کارہنے والا ہے وہ اکثر ہمارے گھر آتا جاتا ہے اور ہمارے تعلقات بہت اچھے ہیں میں نے اس کے ساتھ کبھی بھی اس طرح کا رویہ نہیں رکھا جس سے اسے محسوس ہوکہ وہ میرا ماتحت ہے وہ جب بھی میرے گھر آتا وہ میری بیوی کی طرف اکثر گھورتا رہتا تھا اور میں نے کئی بار نوٹ کیا کہ وہ میری بیوی کے حساس حصوں کو دیکھنے کی کوشش کرتا تھا اس بات کو میرے خیال میں رابی نے بھی نوٹ کیا تھا اس لئے وہ بھی اکثر اس وقت ایسی حالت میں عادل کے سامنے آتی کہ اس کو اس کے جسم کے ان حصوں کا کسی حد تک نظارہ ہوسکے اکثر جب عادل ہمارے گھر آتا تو رابی بریزئیر کے بغیر ہی کپڑے پہنتی تاکہ عادل اس کے مموں کا بہتر طورپر نظارہ کرسکے میں نے اپنی خواہش کو پوراا کرنے کے لئے عادل کا انتخاب کیا اور اس پر گذشتہ ماہ باقاعدہ کام شروع کردیا جس کا رابی کو بھی علم نہیں ہوا میں نے عادل کو آفس سے واپسی پر اور صبح آفس جانے سے پہلے روزانہ اپنے گھر بلانا شروع کردیا اور اس کے ساتھ کافی دیر تک گھر میں بیٹھے رہتا تھامیں نے اپنے موبائل پر رابی کی ایک تصویر بنائی جو اس وقت بنائی گئی تھی جب ہم لوگ سیکس سے فارغ ہوئے تھے اور رابی اپنی آنکھیں بند کئے بیڈ پر لیٹی ہوئی تھی اس تصویر کے بارے میں رابی کو بھی علم نہیں تھا ایک روز دوپہر کے وقت میں نے عادل سے کہا کہ آج کھانا باہر کسی ہوٹل پر کھاتے ہیں ہوٹل میں جاکر میں نے اپنے موبائل پر عادل کی ایک تصویر بنائی اور اس کو کہا کہ یہ دیکھوتمہاری تصویر کتنی اچھی بنی ہے میں نے موبائل اس کے ہاتھ میں دیا اورخود باتھ روم جانے کے لئے اٹھ گیا میں نے باتھ روم میں جان بوجھ کر پانچ چھ منٹ لگا دیئے حالانکہ مجھے باتھ روم جانے کی حاجت ہی نہیں تھے جب واپس آیا تو چپکے سے عادل کے پیچھے آکر کھڑا ہوگیا عادل کو معلوم نہیں ہوا کہ میں اس کے پیچھے کھڑا ہوا ہوں میں نے دیکھا کہ عادل موبائل پر رابی کی وہی سپیشل فوٹو دیکھ رہا ہے چند سیکنڈ میں وہیں کھڑا رہا اور پھر اچانک اس کے سامنے آکر اس کے ہاتھ سے فوراً موبائل لے لیااوہ یار تم یہ تصویر دیکھ رہے تھے اگر رابی کو علم ہوگیا کہ میں نے اس کی یہ تصویر بنائی ہے تو وہ مجھ سے بہت ناراض ہوگی‘ میں نے اس سے کہاجبکہ دوسری طرف عادل بھی پریشان ہوگیا تھا کہ وہ رابی کی تصویر دیکھتے ہوئے پکڑا گیا ہے میری بات سن کر تھوڑا سا ریلیکس ہوگیایار تم رابی سے نہ کہنا کہ میں نے موبائل پر اس کی یہ تصویر بنائی ہوئی ہے‘ میں نے عادل کی منت کرنے والے لہجے میں کہاجی بالکل میں بھابھی کو کبھی نہیں بتاﺅں گا اور آپ کو بھی یہ بات کہنے کی ضرورت نہیں کیوں کہ میں اتنا پاگل تو نہیں ہوں‘ عادل نے کہاعادل میں نے یہ تصویر اس وقت بنائی تھی جب ہم لوگ سیکس کے بعد فارغ ہوگئے تھے اور رابی بیڈ پر لیٹی ہوئی تھی مجھے ایسے لیٹی ہوئی اچھی لگی سو میں نے اس کی تصویر بنالی لیکن رابی کو علم نہیں ہے کہ میں نے اس کی تصویر بنائی ہے دیکھو کیسا اچھا پوز ہے یہ‘ میں نے موبائل اس کے ہاتھ میں دوبارہ دیتے ہوئے کہابہت اچھی ‘ شی از رئیلی بیوٹی فل وویمن‘ اس نے اپنی رال ٹپکاتے ہوئے کہا میں نے نوٹ کیا کہ تصویر دیکھتے ہوئے اس کی آنکھوں میں عجیب سی چمک تھی ہاں یہ تو حقیقت ہے کہ وہ بہت ہی خوب صورت ہے اور اس کے ساتھ ساتھ وہ ہاٹ بھی بہت ہے‘ میں نے عادل کی معلومات میں اضافہ کرنے کے لئے کہارئیلی ۔۔۔۔۔۔عادل نے مجھے سوالیہ انداز میں پوچھا جس پر میں سمجھ گیا کہ عادل رابی کے بارے میں خفیہ معلومات میں انٹرسٹڈ ہے ہاں یار ۔۔۔۔۔۔۔ رابی بیڈ پر بہت ہاٹ ہے ‘ میں نے اس سے کہایار تم تو بہت ہی خوش قسمت ہو کہ تم کو ایسی بیوی ملی میری بھی خواہش ہے کہ میری شادی بھی کسی ایسی ہی لڑکی سے ہو‘ یار ناراض نہ ہونا اگر رابی تمہاری بیوی نہ وہ ہوتی تو میں اس کو پھسانے کی کوشش کرتا‘ عادل نے ڈرتے ڈرتے کہایہ کام تو تم اب بھی کرسکتے ہو‘میں نے اس کا حوصلہ تھوڑا سا بڑھا دیارئیلی ۔۔۔۔۔۔کیا تم کو اس پر اعتراض نہیں ہوگا‘ آصف کو جیسے میری بات پر یقین ہی نہیں ہوا تھا ہاں لیکن ایک بات کا خیال رکھنا کہ رابی کو کسی صورت بھی علم نہیں ہونا چاہئے کہ مجھے اس بات کا علم ہے‘ میں نے عادل سے کہااس کے بعد میں نے بات بدلی اور ہم لوگ آفس چلے گئے شام کو آفس سے گھر جاتے ہوئے عادل نے گاڑی میں رابی کی بات چھیڑ لی دوپہر سے وہ والی تصویر میرے ذہن میں گھوم رہی ہے‘ عادل نے کہاکون سی والی‘ مجھے معلوم ہوگیا تھا کہ عادل کس تصویر کی بات کررہا ہے لیکن میں نے جان بوجھ کر انجان بنتے ہوئے کہا میں چاہتا تھا کہ عادل خود ہی مطلب کی بات پر آئے یار رابی کی جو میں نے دوپہر کو موبائل پر دیکھی ہے‘ اس نے مجھے کہا اچھا ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔ وہ تصویر تو ہے ہی ایسی کہ ذہن میں بیٹھ جائے ‘ میں نے اس سے کہامیں ایک بار پھر دیکھ سکتا ہوں اس تصویر کو‘ اس نے مجھے کہاہاں ہاں کیوں نہیں‘ میں نے موبائل اس کے ہاتھ میں دیتے ہوئے کہااس نے موبائل پر تصویروں کا فولڈر کھولا اور مطلوبہ تصویر نکال کر دیکھنے لگاونڈر فل یار ۔۔۔۔۔۔۔۔۔ کیا باڈی ہے اور کیا فگر ہے‘ عادل نے تصویر دیکھتے ہوئے کہا کیا کہا تم کو اندازہ ہے کہ اس کا فگر کیا ہوگا‘ میں نے اس سے پوچھاہاں ہاں مجھے اندازہ ہوگیا ہے کہ اس کے مموں کا سائز 36 ہوگا‘ اس نے میری طرف دیکھ کر دانت نکالتے ہوئے کہابالکل ٹھیک یار تمہارا اندازہ بالکل ٹھیک ہے اس کے ممے بالکل 36 سائز کے ہیں‘ میں نے بھی مسکراتے ہوئے کہامجھے لگتا ہے کہ تمہارا عورتوں کے حوالے سے کافی تجربہ ہے ‘ میں نے اس سے پوچھانہیں یار میری قسمت ایسی کہاں ہے‘ اس نے منہ بناتے ہوئے کہاتو پھر تم نے رابی کے مموں کا بالکل درست سائز کیسے بتادیا ‘ میں نے اس سے کہایہ تو بلیو فلموں کا کمال ہے مگر حقیقت میں ایساکہا ں ہے میں تو ایسی باتیں صرف سوچ سکتا ہوں حقیقت میں ایسا کہاں ہوسکتا ہے اب رابی کے بارے میں سن لو میں کئی مہینوں سے اس کے بارے میں سوچ رہا ہوں لیکن اس سے بات کرنے کی ہمت ہی نہیں ہے‘ عادل بات کو پھر رابی پر لے آیا وہ چاہتا تھا کہ بات رابی کے بارے میں ہی ہوتی رہےمیں نہیں مانتا کہ تمہارا تجربہ نہیں ہے‘ میں نے اس کو بے یقینی والے انداز میں کہاحقیقت یہی ہے ‘ اس نے کہاحیرت ہے یار لیکن میں ابھی تک نہیں مان سکتا خیر تم کہتے ہوتو یقین کرلیتا ہوں‘ میں نے کہاتم نے رابی کی صرف ایک ہی تصویر بنائی ہے یا کوئی اور بھی ہے اس کی اس طرح کی تصویر‘ اس نے موبائل میری طرف بڑھاتے ہوئے کہانہیں صرف ایک ہی بنائی ہے میں نے اگر تم کہو تو میں اور بھی بنا لوں گا‘ میں نے اس کے اشتیاق کو دیکھ کر کہاہاں یار بنانا اور مجھے دکھانا‘ اس نے کہااور پھر گھر آنے پر میں اس کو لے کر اپنے گھر ہی چلا گیاشام کا کھانا ہم نے اکٹھے کھایا اور پھروہ حسب عادت رابی کو ہی گھورتا رہا اس دوران جب رابی کچن میں گئی عادل نے مجھے کہا کہ یار رابی رئیل میں بہت ہاٹ اور سیکسی ہےچپ یہاں نہیں باہر بات کریں گے اگر رابی نے سن لیا تو غضب ہوجائے گا‘ میں نے ڈرتے ہوئے کہااوکے اوکے اب میں چلتا ہوں‘ عادل نے مجھ سے اجازت لی اور چلا گیا اس رات میں نے چوری چوری رابی کی ایسی ہی حالت میں دو تین تصویریں مزید لے لیں اور اگلے روز جب عادل مجھے ملا تو اس نے خود ہی پوچھ لیا کہ مزید تصویر بنائی ہیں میں نے جان بوجھ کر جھوٹ بولا کہ نہیںبنا سکا آج ضرور بنا لوں گا اس سے اگلے روز بھی عادل نے پوچھا تو میں نے موبائل اس کو دے دیا عادل نے تصویریں دیکھیں تو اس کی آنکھیں پھٹی کی پھٹی رہ گئیںیار بہت خوب بہت خوب۔۔۔۔۔ زبردست یار بہت اچھے پوز میں تصویر لی ہے لیکن اگر آپ یہ تصویر اس زاویے سے بناتے کہ رابی کی پھدی بھی واضح طورپر نظر آتی تو مزید اچھا ہوتا ‘ عادل نے بظاہر خوش مگر مکمل طورپر مطمئین نظر نہ آنے والے انداز میں کہااگلے روز میں نے اسی پوز میں تصویر بنالی جیسا کہ عادل نے کہا تھا یہ تصویر دیکھ کر عادل خوش ہوگیا اور مجھ سے کہنے لگا کہ کاش میں رابی کو حقیقت میں ایسے دیکھوں تو مزہ آجائے گا‘ عادل نے ایسے کہا جیسے کہ اس کی خواہش کبھی پوری نہیں ہوسکتیکیا تم رئیل میں اس کو ایسے دیکھنا چاہتے ہو‘ میں نے اس سے پوچھااگر ایسا موقع مل جائے تو میں خود کو دنیا کا خوش قسمت ترین انسان سمجھوں گا‘ عادل نے کہااوکے میں ایک آدھ دن میں کوئی پلان بناتا ہوں اور تم بھی سوچو کہ ایسا کیسے ممکن ہے لیکن ایک بات ذہن میں رہے کہ کسی صورت بھی رابی کو علم نہ ہوکہ ہم لوگ کیا کررہے ہیں‘ میں نے ایک بار پھر اس کو تلقین کی ڈیفی نیٹلی دوست‘ کیا مجھے تم نے پاگل سمجھ رکھا ہے کہ میں کسی کو بتاﺅں گا‘ ٹھیک ہے‘ میں نے اس سے وعدہ کرلیا اس سے اگلے روز اس نے مجھے پلان کے بارے میں پوچھا میں نے کہا کہ پلان بنا لیا ہے میں نے اس کو پلان کے بارے میں بتایا وہ پلان سن کر اچھل پڑاباس یہ بہت خطر ناک ہے ہم پکڑے بھی جاسکتے ہیں‘ عادل نے کہانہیں پکڑے جاتے یہ بہت فول پروف پلان ہے‘ میں نے اس کو تسلی دی میں نے اس کو یقین دلادیا کہ پلان واقعی بہت اچھا اور ہم دنوںنے پلان پرعمل درآمد کے لئے ہم نے ہفتہ اور اتوار کی درمیانی شب منتخب کی اس روز منگل تھا اس کے بعد مسلسل روز اس پلان پر بار بار بات ہوتی اور اس پر گفت وشنید ہوتی پلان میں باہمی مشورے کے ساتھ کئی تبدیلیاں بھی کی گئیں اور آخر وہ دن آگیا جس کا ہمیں انتظار تھا ہفتہ کو آفس سے واپسی پر پھر پلان پر بات ہوئی اور اس کو حتمی شکل دے دی گئی کھانا کھانے کے بعد میں اور رابی ٹی وی کے سامنے بیٹھ گئے اور آپس میں باتیں بھی کرنے لگے میں نے اس سے کہا کہ آج ایک سپیشل پروگرام ہے اس نے مجھے پروگرام کے بارے میں پوچھا تو میں نے اس کو کہا کہ یہ ایک سرپرائز ہے وہ اس پر بہت تجسس میں مبتلا ہوگئی لیکن میں نے اس کو نہ بتایا وہ مجھے پروگرام کے بارے میں بار بار پوچھ رہی تھی اس نے میرے گلے میں باہیں ڈال کر مجھے پوچھنے کی کوشش کی لیکن میں نے اس کو کچھ بتانے کی بجائے اس کو کسنگ شروع کردی اور پکڑ کر بیڈ روم میں لے گیا میں نے اس کے تمام کپڑے اتروا دئےے اور اس کی آنکھوں پر پٹی باندھ کر اس کو بیڈ پر لٹا دیایہ کیا کررہے ہو‘ رابی نے تھوڑا سا احتجاج کرتے ہوئے کہا،یہ سرپرائز ہے‘ میں نے اس سے کہاکیا سرپرائز ہے مجھے بھی توبتاﺅ‘ اس نے ایک بار پھر مجھ سے دریافت کیا لیکن میں نے اس کی بات ان سنی کردی اور اس کو چپ کرکے لیٹنے کو کہا جب وہ لیٹ گئی تو میں نے اس کے دوپٹے سے اس کے ہاتھ پاﺅں بھی اس طرح بیڈ سے باندھ دیئے کہ اس کی ٹانگیں کھلی ہوئی تھیں اور باہیں بھی پھیلی ہوئی تھیں اس وقت اس کے جسم کا ایک ایک انگ کسی بھی دیکھنے والے کے لئے پہلی نظر میں واضح طورپر نظر آسکتا تھا میں نے اس کی آنکھیں اور ہاتھ پاﺅں باندھنے کے بعد اس کے کانوں پر ہیڈ فون لگا کراس کا فیورٹ میوزک ریڈیوسٹیشن آن کردیا اور اس کی آواز اونچی کردی اس نے ایک بار پھر احتجاج کیا کہ یہ کیا ہے میرے کانوں کو ہیڈ فون کیوں لگا رہے ہو میں نے اس کا احتجاج نظر انداز کردیا اور اس سے کہا کہ روٹین کا سیکس کرتے کرتے اکتا گیا ہوں آج تبدیلی کررہا ہوں جس پر وہ بھی بظاہر تجسس میں آگئی اور اس کے مموں میں تناﺅ آگیا اور ان کے نپلز کھڑے ہوگئے اس کے بعد میں نے فون پر عادل کوکہا کہ وہ آجائے اور دروازے کالاک کھول کر پھر کمرے میں آگیا چند منٹ کے بعد ہی عادل کمرے میں موجود تھا جب اس نے رابی کو ایسے لیٹے ہوئے دیکھا کہ وہ پوری طرح ننگی ہے اور اس کی آنکھیں اور ہاتھ پاﺅں بندھے ہوئے ہیں پہلی نظر پڑتے ہی عادل دروازے میںہی ٹھٹھک گیااور چند منٹ تک ایسے ہی کھڑا ہوا اس کو دیکھتا رہا عادل شکل سے کافی نروس دکھائی دے رہا تھا شائد اس کو یقین نہیں آرہا تھا کہ یہ حقیقت ہے یا کوئی خواب۔دیکھ لو غور سے اور اپنی خواہش پوری کرلو‘ میں نے اس کے کان کے قریب اپنا منہ لے جاکر کہا اس نے کوئی جواب نہ دیا اور ایک بار مجھے دیکھ کر آگے بڑھ گیا اور بیڈ کے گرد گھوم کر اس نے دور سے ہی اس کے جسم کا نظارہ کیا اس وقت رابی اپنی پیٹھ کر اوپر کرکے اور اپنی بازوﺅں اور ٹانگوں کو ہلاکر آزاد ہونے کی کوشش کررہی تھی اس نے دو تین منٹ تک اس کے جسم کا بغور جائزہ لیا وہ اس وقت ٹراﺅزر اور ٹی شرٹ میں ملبوس تھا میں نوٹ کررہا تھا کہ اس کا لن پوری طرح سے کھڑا ہوا ہے دو تین منٹ بیڈ کے گرد گھوم کر اس نے رابی کے جسم کا معائنہ کیا اور پھرمیرے پاس آکر کہنے لگا اگر تم اجازت دو تو میں اس کے جسم کو چھو کر اور اس کے مموں کو چوس کر مزہ لے سکتا ہوںاوکے ‘ لیکن یاد رہے کہ میں تم کوصرف اس کے جسم کو چھونے اور اس کے مموں کو چوسنے کی ہی اجازت دے رہا ہوں اس سے آگے کچھ نہیں کرنا‘ میں نے اس سے کہاتھینک یو دوست‘ یو آر مائی بیسٹ فرینڈ‘ آئی رئیلی پراﺅڈ آف یو‘ عادل نے مجھے کہا اور پھر بیڈ کے قریب جاکر اس نے اپنا ایک ہاتھ رابی کے ممے کی طرف بڑھا دیاجیسے ہی اس نے رابی کے ممے کو ہاتھ لگایا رابی کے منہ سے اس س س س س س س س کی آواز نکلی اور اس نے اپنا سانس اندر کی طرف کھینچ لیااوپر ہوجاﺅ بیڈ کے اوپر‘ میں نے اس سے کہا تو وہ بیڈ کے اوپر چڑھ کر رابی کے بالکل پاس گھٹنوں کے بل بیٹھ گیااس نے رابی کے نپل کے گرد اپنی انگلیاں گھمائیں اور پھر ایک نپل کو اپنے منہ میں ڈال کرچوسنے لگا جبکہ دوسرے ممے کے گرد اپنا ہاتھ گھمانے لگامیں نوٹ کررہا تھا کہ رابی بھی ان لمحات کو انجوائے کررہی ہے وہ اپنے چوتڑ اٹھا کر اور اپنی باہوں اور ٹانگوں کو چھڑانے کی کوشش کررہی تھی لیکن باندھے ہونے کی وجہ سے ایسا نہیں کرپارہی تھی اس کے کانوں میں لگے ہیڈ فونز میں سے اتنی آواز آرہی تھی کہ مجھے معلوم ہوگیا کہ اس وقت ریڈیو پر کون سا گانا چل رہا ہے اس سے مجھے تسلی ہوگئی تھی کہ ہماری بات چیت کو رابی نہیں سن سکتی عادل اس کے ایک ممے کو چھوڑ کر دوسرے ممے کو چوسنے لگا اور پھر اس نے تھوڑی دیر کے بعد اپنا سر اونچا کیا اور اپنا ہاتھ اس کی گوری اور لمبی گردن پر پھیرنے لگا اس پھر آہستہ آہستہ اپنا ہاتھ نیچے مموں پر لے آیاپھر اس کا ہاتھ اس کے پیٹ پر چلنے لگا تھوڑی دیر کے بعد وہ اپنا ہاتھ مزید نیچے لے گیا اور اس کی ناف کے نیچے اور پھدی کے تھوڑا اوپر جاکر اس نے اپنا ہاتھ روک لیا اور میری طرف دیکھنے لگامیں تھوڑاآگے بڑھا اور اس کے کان کے قریب اپنا منہ لے جاکر اس کو کہا کہ تم اپنی خواہش پوری کرنے کے لئے جو مرضی کرلو لیکن صرف اسے چودنا نہیں ہے اس نے میری بات سنی اور پھر تھینک یو کہنے کے بعد اپنا دھیان رابی کی طرف کرلیا اس نے اپنا ہاتھ پھدی کے اوپر کیا اور اس کی پھدی کا منہ اپنے ہاتھ کی ہتھیلی سے ڈھک دیا
اس نے چند سیکنڈ رابی کی پھدی پر ہاتھ رکھنے کے بعد اپنا ہاتھ ہٹا لیا اور اس کو غور سے دیکھنے لگا اس کا ہاتھ گیلا ہوچکا تھا اس نے اپنے ہاتھ کو اوپر کیا اور اپنے ناک کے قریب لے جاکر سونگھا اور ایک لمبا سانس لیا اس دوران رابی نے اپنی ٹانگوں کو کھولنے اور بند کرنے کی کوشش شروع کردی جس سے اندازہ ہورہا تھا کہ اسے بھی مزہ آرہا ہے میں نے ان خوب صورت لمحات کو کیمرے میں محفوظ کرنے کا سوچا اور فوری طورپر اپنا ہینڈی کیم نکال کر اس کو آن کیا اور اس کا زوم کلوز کرکے شارٹ لینے لگا اس وقت عادل ایک بار پھررابی کے ممے چوس رہا تھا اس کا ایک ہاتھ دوسرے ممے پر تھا اور دوسرا ہاتھ اس کی ناف کے نیچے پھدی کے اوپر چھوٹے چھوٹے بالوں پر حرکت کررہا تھا وہ رابی کے بازو میں لیٹا ہوا تھا اور اس نے اپنی ایک ٹانگ روبی کی ٹانگ پر رکھی ہوئی تھی اچانک عادل تھوڑا سا پیچھے ہوا اور اپنی پینٹ کو نیچے سرکا دیا میں نے اس کو دیکھا تو کیمرے سے آنکھ ہٹا کر اس کو ایک بار پھر تلقین کی
”عادل روبی کو چودنا نہیں ہے“
عادل نے جواب میں ہاں میں سر ہلایا اور پھر سے اس کے ساتھ چمٹ گیا اس نے پھر اس کے ممے چوسنے شروع کردیئے اور اس کی ٹانگ پر ٹانگ رکھ کر اپنی ٹانگ سے اس کی ٹانگ کو رگڑنا شروع کردیا اس کے دونوں ہاتھ پہلے والی جگہوں پر چلے گئے تھے
او و و وہ یو آر سو ہارڈ ڈارلنگ‘ رابی کی ٹانگ سے جیسے ہی عادل کا لن ٹچ ہوا وہ منمائی
اوہ م م م م م م‘ عادل نے صرف اتنا کہنے میں ہی اکتفا کیا حالانکہ اس کو معلوم تھا کہ رابی کے کانوں پر لگے ہیڈ فونز میں میوزک چل رہا ہے اور وہ اس کی بات نہیں سن سکے گی
اب عادل نے اپنی ایک انگلی رابی کی پھدی میں ڈال دی جس پر اس نے اپنی گانڈ کو جس حد تک ممکن تھا اوپر اٹھا کر جواب دیا جبکہ میں ان تمام لمحات کو کیمرے میں محفوظ کررہا تھا عادل نے تھوڑی دیر بعد پھدی میں دوانگلیاں ڈال کر ان کو آگے پیچھے کرنا شروع کردیا پھر چند سیکنڈ بعد اس نے اپنی انگلیاں باہر نکالیں جو پوری طرح سے بھیگی ہوئی تھیں اس نے ان انگلیوں کو سونگھا اور پھر ان کو منہ میں ڈال کرچاٹ لیا
بہت مزے دار ہے تمہاری بیوی کا جوس ‘ کیا میں اس کو براہ راست اپنے منہ سے ٹچ کرلوں ‘ عادل نے میری طرف دیکھتے ہوئے پوچھا
میں نے کیمرے سے ایک لمحے کے لئے آنکھ ہٹائی اور اس کو دیکھتے ہوئے کہ جو مرضی کرلو لیکن اس کو چودنا نہیں ہے ‘ میں نے اس کو مشروط اجازت دے دی جس پر وہ اٹھا اوراس کے کندھوں کے قریب آکر بیٹھ گیا اس نے اپنے لن کو ہاتھ میں پکڑ کر مٹھ لگانا شروع کردی اور چند منٹ بعد اس نے اپنے لن کی ٹوپی رابی کی گردن کے پاس کی اور پھر اپنی منی اس کے منہ پر نکال دی پھر اس نے اپنا ڈھیلا لن رابی کے منہ کے قریب کیا اور اس کو اپنے ہاتھ سے رابی کے ہونٹوں سے ٹچ کیا رابی نے اپنا منہ کھولا اور اس اندر کرکے چوسنے لگی جس پر اس کا لن چند منٹوں میں ہی دوبارہ کھڑا ہوگیا میںان تمام لمحات کو کیمرے میں محفوظ کررہا تھا جبکہ اس وقت میرا لن بھی اپنے آپ سے باہر ہورہا تھا اس کے بعد عادل اپنی جگہ سے اٹھا اور رابی کی ٹانگوں کے درمیان میں آگیا
اس وقت عادل کا لن پوری طرح سے کھڑا ہوا تھا میں نے محسوس کیا کہ عادل کا لن میری نسبت تھوڑا بڑا اور موٹا بھی ہے میں نے اس کے لن کا کلوز شاٹ لیا وہ اتنی دیر میں اس کی ٹانگوں کے درمیان آگیا اور تھوڑا نیچے ہوکر اس نے اپنا منہ اس کی پھدی پر جما دیا اس نے اپنی زبان باہر نکالی اور اس کی نوک سے رابی کی پھدی کو ٹچ کرنے لگامیں دیکھ رہا تھا کہ عادل نے اپنے دونوں ہاتھ بھی رابی کی پھدی پر رکھے ہوئے تھے اور اس نے اپنے انگوٹھوں سے اس کو تھوڑا سا کھولا اور اپنی زبان کو مزید اندر تک کیا اور پھر اپنی زبان کو اس کی پھدی کے اندر باہر کرنے لگا اس کے بعد اس نے اپنے ہونٹ اس کی پھدی پر جما دئےے
اب مجھے مزید نہ تڑپاﺅ ڈارلنگ اب آجاﺅ‘ سر کو ادھر ادھر مارتی اور اپنے ہاتھ پاﺅں چھڑانے کی کوشش میں مصروف رابی کی آواز آئی
خبردار ۔۔۔۔ اس کو کسی صورت بھی چودنانہیں ہے‘ میںنے عادل کی طرف دیکھتے ہوئے کہااور پھر سے اپنی آنکھ کیمرے پر لگا لی
عادل نے جیسے میری بات سنی ہی نہیں وہ اٹھ کر بیٹھ گیا اور اپنا لن ہاتھ میں پکڑلیامیں نے کیمرے سے آنکھ ہٹائی اور فوری طورپر پاس آکر عادل کے کندھے پر ہاتھ رکھ دیا اور اس سے کہا کہ میں نے تم کو پہلے بھی کہا تھا کچھ بھی ہوجائے اس کو چودنا نہیں ہے جبکہ دوسری طرف رابی کے منہ سے”اب مجھ سے برداشت نہیں ہورہا پلیز چودنا شروع کرو۔۔۔۔ جلدی کرو“ کی آوازیں آرہی تھیں عادل نے میری طرف دیکھا اور کہا ”یار تم بے فکر ہوجاﺅ میں نے تم سے وعدہ کیا ہے کہ اپنا لن اس کی پھدی میں نہیں ڈالوں گا میں صرف اس کو اس کی ٹانگوں پر ہی رگڑوں گا جس پر میں تھوڑا پیچھے ہوگیا اور کیمرے سے شوٹنگ شروع کردی اس نے اپنا لن اس کی ٹانگوں پر رگڑنا شروع کیا اور پھر اپنا لن اس کی پھدی پر رکھ کر اس کی پھدی کے قریب لے گیا میرے ذہن میں ایک دم خیال آیا کہ اب اس کو اٹھا دوں میں کیمرے پر آنکھ جمائے اس کی طرف دیکھ رہا تھا اس کا لن میری بیوی کی پھدی کے قریب سے قریب ہوتا جارہا تھا جبکہ میرے دل کی دھڑکن تیز ہورہی تھی میں سوچ رہا تھا کہ اب اس کو منع کردینا چاہئے میں نے پھر سوچا کہ اس کو میں نے پہلے ہی خبردار کردیا ہے اب یہ رک جائے گا مگر اس کا لن میری بیوی کی پھدی کے مزید قریب ہوگیا پھر اس نے اپنا لن میری بیوی کی پھدی کے منہ پر لا کر روک دیا اور اس کو ایک ہاتھ سے پکڑ کر اس کے اوپر رگڑنے لگا اب میرا دل پہلے سے بھی زیادہ تیزی کے ساتھ دھڑک رہا تھا
اب اندر ڈال بھی دو کیا مجھے مارنا ہے‘ رابی کے منہ سے آواز نکلی عادل نے ایک لمحے کے لئے میری طرف دیکھا میں نے اس کو پھر منع کیا جس پر اس نے کہا ٹھیک ہے میں صرف اس کو اوپر رگڑتا ہوں
جلدی کرو میں مرے جارہی ہوں‘ رابی پھر سے چلائی
عادل نے اپنا لن اس کی پھدی پر رگڑنا پھرسے شروع کردیا رابی کی پھدی جو بہت زیادہ پانی چھوڑ چکی تھی اب کافی حد تک پھسلن زدہ ہوگئی تھی عادل کا لن بار بار کبھی اوپر کبھی نیچے کی طرف پھسل رہا تھا میں نے پھر عادل کو خبردار کیا دیکھو تمہارا لن کسی صورت بھی اس کی پھدی کے اندر نہ جانے پائے صرف اور صرف اپنے لن کی ٹوپی کو اس کی پھدی کے ہونٹوں سے ٹچ کرنا اس سے آگے نہ جانا اس نے میری سنی ہاں میں سر ہلایا اور پھرسے رگڑنا شروع کردیاعادل نے اپنا ہاتھ اس کی پھدی کی طرف بڑھایا اور اس کی پھدی کے دونوں ہونٹوں کو مزید کھولا اور پھر سے تھوڑا تیزی کے ساتھ رگڑنا شروع کردیا میں دیکھ رہا تھا کہ رابی کی پھدی کافی حد تک پانی چھوڑ چکی تھی اور کھلی ہوئی تھی اب اس کی خواہش تھی کہ کسی طریقے سے لن اس کی پھدی میں چلا جائے جس کے لئے وہ بار بار منہ سے بھی کہہ رہی تھی اور اپنے ہاتھ پاﺅں بھی ہلا رہی تھی
مجھے جلدی سے چودنا شروع کرو تیزی سے اور طاقت سے مجھے چودو۔۔۔۔ اب میں نے پھر سوچا کہ اب میں عادل کو روک دوں ابھی یہ سوچ ہی رہا تھا کہ رابی نے اچانک اپنی گانڈ کو تھوڑا سا اوپر کیا جبکہ عادل کی طرف سے نیچے کو تھوڑا سا زور لگ گیا
میں حیرت سے عادل کے لن اور اپنی بیوی کی پھدی کی طرف دیکھنے لگا عادل کے لن کی ٹوپی میری بیوی کی پھدی کے اندر چلی گئی تھی میں حیرت سے اس طرف دیکھ رہاتھا جبکہ کیمرہ میرے ہاتھ میں پکڑا ہوا تھا اور اس کا رخ بھی اسی طرف تھا
مجھے چودو۔۔۔۔۔پلیز مجھے زور زور سے پوری طاقت سے چودو۔۔۔۔ رابی کی آواز میرے کانوں تک پہنچی
عادل نے میری طرف عاجزی سے دیکھا جیسے کہہ رہا ہو کہ اس میں میری کوئی غلطی نہیں ہے مگر اس نے اپنا لن اسی جگہ پر ساکت کررکھا تھا اس نے اس کو نکالا نہیں تھا میں بھی خاموشی سے اس کی طرف دیکھ رہا تھا
اس کو اور اندر کرو۔۔۔۔۔۔ پلیز شروع کرو‘ رابی کی آواز پھر کمرے میں گونجی جبکہ عادل میری طرف دیکھ رہا تھا اور میں اس کی طرف دیکھ رہا تھا کیمرے کی نظر صرف لن اور پھدی کے اوپر تھی اس میں مزید کوئی چیز بھی شوٹ نہیں ہورہی تھی عادل کے لن کی ٹوپی ابھی بھی اس کی پھدی کے اندر ہی تھا اس نے ابھی تک اس کو باہر نہیں نکالا تھا
کیا کررہے ہو ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔ شروع کرو ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔مجھے تنگ کیوں کررہے ہو‘ میرے کانوں میں پھر آواز گونج اٹھی
میرے ذہن میں اس وقت کشمکش شروع ہوگئی کہ کیا کروں اس کو روک دوں یا اجازت دے دوں
سوری یارررررررر۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔ اس میں میری کوئی غلطی نہیں ہے میں نے جان بوجھ کر ایسا نہیں کیا ۔۔۔۔اگر یہاں تک آگیا ہوں تو آگے بھی اجازت دے دو“عادل نے میری طرف عاجزانہ اور معذرت خواہانہ انداز میں دیکھتے ہوئے کہا
میں ابھی سوچ ہی رہا تھا کہ اس کو کیا کہوں کہ عادل نے میری خاموشی کو اجازت سمجھ لیا اور اس نے اپنی گردن گھما کر نظر رابی کی پھدی پر کی اور پھر اپنے لن کو اندر کی طرف دھکیل دیا اور اس کا لن میری بیوی کی پانی پانی پھدی کے اندر جڑ تک چلا گیا
آہ ہ ہ ہ ہ ہ ہ ہ۔۔۔۔۔۔۔۔رابی نے اپنا سانس اندر کی طرف کھینچتے ہوئے کہا
عادل نے اپنا لن باہر نکالااور پھر جھٹکوں سے اس کو اندر باہر کرنا شروع کردیا اس نے رابی کی ٹانگیں اپنے کندھوں پر رکھیں اور اس کو اپنی پوری طاقت کے ساتھ چودنا شروع کردیا میں حیرت زدہ آنکھوں سے اس کی طرف دیکھنے لگا جبکہ کیمرہ میرے ہاتھ میں پکڑا ہوا تھا اور شوٹنگ میں مصروف تھا اس دوران رابی کے کانوں سے ہیڈ فون تھوڑا باہر نکل آئے میں نے دیکھا تو فوری طورپر ہینڈی کیم کو پکڑے اس کی طرف لپکا اور عادل کو ایک لمحے کے لئے روک کر اس کی توجہ ہیڈ فونز کی طرف دلائی اس نے چدائی روک کر ہیڈ فون دوبارہ سے کانوں میں فٹ کئے جن میں سے اونچی آواز میں میوزک کی آواز آرہی تھی اور پھرسے چدائی شروع کردی پھر اس نے جھٹکے دینا بند کردیئے اور اپنا لن رابی کی پھدی کے اندر روک کر اس کے سینے پر اپنا منہ لے گیا اس نے اس کے ممے اپنے منہ میں لے کر چوسنا شروع کردیئے اور پھر چند منٹ بعد دوبارہ سے چدائی شروع کردی
اچانک میرے ذہن میں خیال آیا کہ عادل نے کنڈوم نہیں پہن رکھا
اوہ شٹ! عادل کو روکنا چاہئے ‘ میں ابھی اس کو روکنے کی سوچ ہی رہا تھا کہ اس نے ایک زور کا جھٹکا لیا اور اپنا پورا لن اس کی پھدی کے اندر ڈال کررک گیا اس نے اپنی آنکھیں بند کرلیں اور اس کے جسم نے ایک دو جھٹکے لئے اور پھر چند سیکنڈ کے بعد اس نے اپنا لن اس کی پھدی سے باہر نکال لیا میں نے دیکھا کہ اس کا لن ابھی نرم تھا
اوہ نوووووووو۔۔۔۔۔عادل میری بیوی کی پھدی میں ہی فارغ ہوگیا تھا میں خاموشی سے اس کی طرف دیکھ رہا تھا اس نے فوری طورپر اپنے کپڑے پہنے اور اٹھ کر مجھے گلے لگا لیا
تھینک یو ویری ویری مچ مائی ڈئیر فرینڈ یو آر سو گریٹ اینڈ یور وائف از ویری ویر ی ہاٹ ۔۔۔۔۔اٹ از موسٹ ونڈر فل نائٹ فار می ان مائی لائف ۔۔۔۔آئی ول ناٹ فارگیٹ یو اینڈ یور وائف اینڈدس نائٹ۔۔۔۔ وہ مجھ سے علیحدہ ہوا اور فوری طورپر کمرے سے باہر نکل گیا
میں نے اپنی بیوی کی طرف دیکھا جو اپنا جسم ڈھیلا چھوڑے بیڈ پر پڑی تھی اس کے ہاتھ پاﺅں اور آنکھیں بندھی ہوئی تھیں اور اس کی پھدی سے عادل کے لن سے نکلنے والا مادہ اور اس کا اپنا پانی مکسچر بن کر قطرہ قطرہ اس کی ٹانگوں سے بہتا ہوا باہر نکل رہا تھا میں نے کیمرہ الماری میں رکھا اور کمرے کی لائٹ آف کی اس کے بعد اس کی آنکھیں بازو اور ٹانگیں کھول دی
ویری انٹرسٹنگ‘ ویری ونڈر فل‘ آئی رئیلی انجوائے اٹ ‘ میری بیوی نے مجھے جپھی ڈالتے ہوئے کہا جس پر میں سوچنے لگا کہ اگر اس کو حقیقت معلوم ہوجائے تو یہ کیا سوچے گی تھوڑی دیر بعد وہ سو گئی لیکن میں ساری رات جاگتا رہا اور سوچتا رہا کہ یہ کیا ہوگیا ہے مجھے ایسا کرنا چاہئے تھا یا نہیں آخر میں نے یہ سوچا کہ اس کو ایک ڈراﺅنا خواب سمجھ کر بھول جانا ہی بہتر ہے میں نے سوچا کہ اگر رابی کو معلوم ہوگیا کہ میں نے اس طرح کیا ہے تو وہ مجھ سے ناراض ہوجائے گی جس کا میں کسی صورت بھی متحمل نہیں ہوسکتا کیوں کہ میں اس سے بہت محبت کرتا ہوں
اس سے اگلی رات ہم لوگ جب سیکس کررہے تھے اچانک رابی نے میرا لن اپنے منہ میں ڈال لیا اور اس کو چوسنا شروع کردیا حالانکہ اس سے پہلے وہ کبھی خود سے ایسا نہیں کرتی تھی میرے کہنے پر ہی وہ میرا لن اپنے منہ میں ڈالتی تھی اور تھوڑی دیر بعد ہی میرا لن اپنے منہ سے نکال دیتی تھی اس رات اس نے میرالن خود سے چوسنا شروع کیا اور اپنے منہ میں ہی اس کو فارغ کیا اور میری منی کا آخری قطرہ بھی اپنے منہ میں لے گئی
ندیم تمہاری منی کا ٹیسٹ کچھ تبدیل سا ہے کل ٹیسٹ کچھ اور تھا ‘ رابی نے میرا ڈھیلا لن اپنے منہ سے نکالتے ہوئے کہا
میرا دل زور زور سے دھڑکنے لگا اور میں چند لمحے خاموش رہا اور میں نے سوچا کہ اب اس کو بتا دینا ہی بہتر ہے
وہ اصل میں وہ ۔۔۔۔۔۔
مجھے معلوم ہے‘ تم کچھ نہ بتاﺅ تو بھی میں جان چکی ہوں‘ اس نے کہا تو میں جیسے زمین میں گڑ گیا ہوں میرے دل کی دھڑکن مزید تیز ہوگئی
تم کیا جانتی ہو‘ میں نے اس کو پوچھا
رابی مسکرائی اور کہنے لگی کہ کل جب لن میرے ساتھ لگا تو اس کی بناوٹ ایسی نہیں تھی جیسی تمہارے لن کی ہے وہ تھوڑا سا بڑا اور موٹا تھی تھا میں اس وقت تھوڑا کنفیوز ہوگئی تھی لیکن جب میں نے تمہارا لن اپنے منہ میں لیا تو میں سمجھ گئی کہ دال میں کچھ کالا ہے اس کی ٹوپی کافی موٹی تھی اور اس سے آنے والی بو بھی مختلف تھی جب مجھے یقین ہوگیا کہ یہ تم نہیں ہو تو میں پہلے تو ڈر گئی لیکن بعد میں سوچا کہ تم نے خودکیا ہے اور کچھ سوچ سمجھ کر پلان بنایا ہوگیا اور تم کو معلوم ہوگا کہ اس کے برے اور اچھے اثرات کیا ہوسکتے ہیں جس پر میں ریلیکس ہوگئی جس پر میں نے انجوائے کرنے کا سوچا اس وقت مجھے معلوم نہیں تھا کہ مجھے چودنے والا شخص کون ہے لیکن جو بھی تھا بہت اچھا تھا تم جانتے ہو کہ تم اور میں جب کرتے ہیں تو ایک ردھم سے کرتے ہیں لیکن جو یہ شخص تھا اس کے مجھے چودنے کے انداز سے لگا کہ یہ اناڑی ہے جو مجھے بہت اچھا لگا اور میں نے اس کو بہت انجوائے کیا ہے اس کے علاوہ تم نے میرے کانوں کو جو ہیڈ فون لگائے تھے وہ بہت ہی اچھا اور فول پروف آئیڈیا تھا لیکن ریڈیو پر چلنے والا گانا ایک لمحے کے لئے بند ہوگیا اور خاموشی چھا گئی تھی اور میرے کانوں میں سوررررررررری کی آواز بھی پڑی تھی جس سے مجھے معلوم ہوگیا کہ یہ عادل ہے جیسے ہی مجھے یہ معلوم ہوا کہ یہ عادل ہے تو میں ایک لمحے کے لئے خوف زدہ ہوگئی تھی لیکن بعد میں میرا خوف ختم ہوگیا کہ تم نے جو کیا ہے سوچ سمجھ کر کیا ہے جس پر میں نہیں چاہتی تھی کہ یہ مجھے چودنا رکے ‘ میں تمہارے پلان کی داد دیتی ہوں
یہ بہت ہی خوب صورت اور یادگار رات تھی تھینک یو۔۔۔۔تم نے مجھے رئیل میں ایک سرپرائز دیا ہے
مگر تم نے یہ نہیں سوچا کہ یہ بہت رسکی کام ہے کسی اور کو اپنی بیوی کو چودنے کی اجازت دینا اس نے کنڈوم بھی نہیں پہنا ہوا تھا مجھے یہ بتاﺅ کہ تم نے عادل کو کنڈوم پہننے کے لئے کیوں نہیں کہا یا مجھے ہی پہلے بتا دیتے میں کوئی گولی شولی کھا لیتی
آئندہ سے محتاط رہنا کسی بھی مرد کو اپنی بیوی کو چودنے کی اجازت دینے سے پہلے اس بات کو مدنظر رکھ لینا کہ اس نے کنڈوم پہنا ہوا ہے یا نہیں ۔ مجھے اندازہ نہیں تھا کہ تم اتنے لا پرواہ ہوسکتے ہو۔ اس نے موڈ بناتے ہوئے کہا کہ اس طرح کے سیکس سے صرف حمل کا ہی خطرہ نہیں ہوتا اور بھی کئی خطرناک بیماریاں لگ سکتی ہیں جن سے محتاط رہنا چاہئے اس لئے ڈارلنگ آئندہ سے محتاط رہنا کنڈوم کا خاص طورپر خیال رکھنا اچھا ہاں اور عادل کو یہ نہ بتانا کہ میں سب کچھ جان چکی ہوں کہ اس نے مجھے چودا ہے “ اس نے مجھ سے کہا
کیوں؟
ڈارلنگ مجھے اس سے شرم آئے گی اور برا لگے گا
شرم ؟
کم آن ڈارلنگ ابھی تک وہ صرف سوچ رہا ہوگا کہ صرف خاوند کو ہی معلوم ہے کہ اس کی بیوی اس سے چدی ہے اگر اس کو معلوم ہوگیا کہ میں بھی یہ سب کچھ جان چکی ہوں تو وہ مجھ سے فری ہونے کی بھی کوشش کرے گا جو مجھے پسند نہیں ہے اچھا اب مجھے یہ بتاﺅ کہ تم ابھی تک کتنے لوگوں کی بیویاں چود چکے ہو
کسی کی بھی نہیں
میں نہیں مانتی تم نے اتنا فول پروف پلان بنایا تھا کوئی اناڑی اس طرح نہیں سوچ سکتا ۔





اس نے چند سیکنڈ رابی کی پھدی پر ہاتھ رکھنے کے بعد اپنا ہاتھ ہٹا لیا اور اس کو غور سے دیکھنے لگا اس کا ہاتھ گیلا ہوچکا تھا اس نے اپنے ہاتھ کو اوپر کیا اور اپنے ناک کے قریب لے جاکر سونگھا اور ایک لمبا سانس لیا اس دوران رابی نے اپنی ٹانگوں کو کھولنے اور بند کرنے کی کوشش شروع کردی جس سے اندازہ ہورہا تھا کہ اسے بھی مزہ آرہا ہے میں نے ان خوب صورت لمحات کو کیمرے میں محفوظ کرنے کا سوچا اور فوری طورپر اپنا ہینڈی کیم نکال کر اس کو آن کیا اور اس کا زوم کلوز کرکے شارٹ لینے لگا اس وقت عادل ایک بار پھررابی کے ممے چوس رہا تھا اس کا ایک ہاتھ دوسرے ممے پر تھا اور دوسرا ہاتھ اس کی ناف کے نیچے پھدی کے اوپر چھوٹے چھوٹے بالوں پر حرکت کررہا تھا وہ رابی کے بازو میں لیٹا ہوا تھا اور اس نے اپنی ایک ٹانگ روبی کی ٹانگ پر رکھی ہوئی تھی اچانک عادل تھوڑا سا پیچھے ہوا اور اپنی پینٹ کو نیچے سرکا دیا میں نے اس کو دیکھا تو کیمرے سے آنکھ ہٹا کر اس کو ایک بار پھر تلقین کی
”عادل روبی کو چودنا نہیں ہے“
عادل نے جواب میں ہاں میں سر ہلایا اور پھر سے اس کے ساتھ چمٹ گیا اس نے پھر اس کے ممے چوسنے شروع کردیئے اور اس کی ٹانگ پر ٹانگ رکھ کر اپنی ٹانگ سے اس کی ٹانگ کو رگڑنا شروع کردیا اس کے دونوں ہاتھ پہلے والی جگہوں پر چلے گئے تھے
او و و وہ یو آر سو ہارڈ ڈارلنگ‘ رابی کی ٹانگ سے جیسے ہی عادل کا لن ٹچ ہوا وہ منمائی
اوہ م م م م م م‘ عادل نے صرف اتنا کہنے میں ہی اکتفا کیا حالانکہ اس کو معلوم تھا کہ رابی کے کانوں پر لگے ہیڈ فونز میں میوزک چل رہا ہے اور وہ اس کی بات نہیں سن سکے گی
اب عادل نے اپنی ایک انگلی رابی کی پھدی میں ڈال دی جس پر اس نے اپنی گانڈ کو جس حد تک ممکن تھا اوپر اٹھا کر جواب دیا جبکہ میں ان تمام لمحات کو کیمرے میں محفوظ کررہا تھا عادل نے تھوڑی دیر بعد پھدی میں دوانگلیاں ڈال کر ان کو آگے پیچھے کرنا شروع کردیا پھر چند سیکنڈ بعد اس نے اپنی انگلیاں باہر نکالیں جو پوری طرح سے بھیگی ہوئی تھیں اس نے ان انگلیوں کو سونگھا اور پھر ان کو منہ میں ڈال کرچاٹ لیا
بہت مزے دار ہے تمہاری بیوی کا جوس ‘ کیا میں اس کو براہ راست اپنے منہ سے ٹچ کرلوں ‘ عادل نے میری طرف دیکھتے ہوئے پوچھا
میں نے کیمرے سے ایک لمحے کے لئے آنکھ ہٹائی اور اس کو دیکھتے ہوئے کہ جو مرضی کرلو لیکن اس کو چودنا نہیں ہے ‘ میں نے اس کو مشروط اجازت دے دی جس پر وہ اٹھا اوراس کے کندھوں کے قریب آکر بیٹھ گیا اس نے اپنے لن کو ہاتھ میں پکڑ کر مٹھ لگانا شروع کردی اور چند منٹ بعد اس نے اپنے لن کی ٹوپی رابی کی گردن کے پاس کی اور پھر اپنی منی اس کے منہ پر نکال دی پھر اس نے اپنا ڈھیلا لن رابی کے منہ کے قریب کیا اور اس کو اپنے ہاتھ سے رابی کے ہونٹوں سے ٹچ کیا رابی نے اپنا منہ کھولا اور اس اندر کرکے چوسنے لگی جس پر اس کا لن چند منٹوں میں ہی دوبارہ کھڑا ہوگیا میںان تمام لمحات کو کیمرے میں محفوظ کررہا تھا جبکہ اس وقت میرا لن بھی اپنے آپ سے باہر ہورہا تھا اس کے بعد عادل اپنی جگہ سے اٹھا اور رابی کی ٹانگوں کے درمیان میں آگیا
اس وقت عادل کا لن پوری طرح سے کھڑا ہوا تھا میں نے محسوس کیا کہ عادل کا لن میری نسبت تھوڑا بڑا اور موٹا بھی ہے میں نے اس کے لن کا کلوز شاٹ لیا وہ اتنی دیر میں اس کی ٹانگوں کے درمیان آگیا اور تھوڑا نیچے ہوکر اس نے اپنا منہ اس کی پھدی پر جما دیا اس نے اپنی زبان باہر نکالی اور اس کی نوک سے رابی کی پھدی کو ٹچ کرنے لگامیں دیکھ رہا تھا کہ عادل نے اپنے دونوں ہاتھ بھی رابی کی پھدی پر رکھے ہوئے تھے اور اس نے اپنے انگوٹھوں سے اس کو تھوڑا سا کھولا اور اپنی زبان کو مزید اندر تک کیا اور پھر اپنی زبان کو اس کی پھدی کے اندر باہر کرنے لگا اس کے بعد اس نے اپنے ہونٹ اس کی پھدی پر جما دئےے
اب مجھے مزید نہ تڑپاﺅ ڈارلنگ اب آجاﺅ‘ سر کو ادھر ادھر مارتی اور اپنے ہاتھ پاﺅں چھڑانے کی کوشش میں مصروف رابی کی آواز آئی
خبردار ۔۔۔۔ اس کو کسی صورت بھی چودنانہیں ہے‘ میںنے عادل کی طرف دیکھتے ہوئے کہااور پھر سے اپنی آنکھ کیمرے پر لگا لی
عادل نے جیسے میری بات سنی ہی نہیں وہ اٹھ کر بیٹھ گیا اور اپنا لن ہاتھ میں پکڑلیامیں نے کیمرے سے آنکھ ہٹائی اور فوری طورپر پاس آکر عادل کے کندھے پر ہاتھ رکھ دیا اور اس سے کہا کہ میں نے تم کو پہلے بھی کہا تھا کچھ بھی ہوجائے اس کو چودنا نہیں ہے جبکہ دوسری طرف رابی کے منہ سے”اب مجھ سے برداشت نہیں ہورہا پلیز چودنا شروع کرو۔۔۔۔ جلدی کرو“ کی آوازیں آرہی تھیں عادل نے میری طرف دیکھا اور کہا ”یار تم بے فکر ہوجاﺅ میں نے تم سے وعدہ کیا ہے کہ اپنا لن اس کی پھدی میں نہیں ڈالوں گا میں صرف اس کو اس کی ٹانگوں پر ہی رگڑوں گا جس پر میں تھوڑا پیچھے ہوگیا اور کیمرے سے شوٹنگ شروع کردی اس نے اپنا لن اس کی ٹانگوں پر رگڑنا شروع کیا اور پھر اپنا لن اس کی پھدی پر رکھ کر اس کی پھدی کے قریب لے گیا میرے ذہن میں ایک دم خیال آیا کہ اب اس کو اٹھا دوں میں کیمرے پر آنکھ جمائے اس کی طرف دیکھ رہا تھا اس کا لن میری بیوی کی پھدی کے قریب سے قریب ہوتا جارہا تھا جبکہ میرے دل کی دھڑکن تیز ہورہی تھی میں سوچ رہا تھا کہ اب اس کو منع کردینا چاہئے میں نے پھر سوچا کہ اس کو میں نے پہلے ہی خبردار کردیا ہے اب یہ رک جائے گا مگر اس کا لن میری بیوی کی پھدی کے مزید قریب ہوگیا پھر اس نے اپنا لن میری بیوی کی پھدی کے منہ پر لا کر روک دیا اور اس کو ایک ہاتھ سے پکڑ کر اس کے اوپر رگڑنے لگا اب میرا دل پہلے سے بھی زیادہ تیزی کے ساتھ دھڑک رہا تھا
اب اندر ڈال بھی دو کیا مجھے مارنا ہے‘ رابی کے منہ سے آواز نکلی عادل نے ایک لمحے کے لئے میری طرف دیکھا میں نے اس کو پھر منع کیا جس پر اس نے کہا ٹھیک ہے میں صرف اس کو اوپر رگڑتا ہوں
جلدی کرو میں مرے جارہی ہوں‘ رابی پھر سے چلائی
عادل نے اپنا لن اس کی پھدی پر رگڑنا پھرسے شروع کردیا رابی کی پھدی جو بہت زیادہ پانی چھوڑ چکی تھی اب کافی حد تک پھسلن زدہ ہوگئی تھی عادل کا لن بار بار کبھی اوپر کبھی نیچے کی طرف پھسل رہا تھا میں نے پھر عادل کو خبردار کیا دیکھو تمہارا لن کسی صورت بھی اس کی پھدی کے اندر نہ جانے پائے صرف اور صرف اپنے لن کی ٹوپی کو اس کی پھدی کے ہونٹوں سے ٹچ کرنا اس سے آگے نہ جانا اس نے میری سنی ہاں میں سر ہلایا اور پھرسے رگڑنا شروع کردیاعادل نے اپنا ہاتھ اس کی پھدی کی طرف بڑھایا اور اس کی پھدی کے دونوں ہونٹوں کو مزید کھولا اور پھر سے تھوڑا تیزی کے ساتھ رگڑنا شروع کردیا میں دیکھ رہا تھا کہ رابی کی پھدی کافی حد تک پانی چھوڑ چکی تھی اور کھلی ہوئی تھی اب اس کی خواہش تھی کہ کسی طریقے سے لن اس کی پھدی میں چلا جائے جس کے لئے وہ بار بار منہ سے بھی کہہ رہی تھی اور اپنے ہاتھ پاﺅں بھی ہلا رہی تھی
مجھے جلدی سے چودنا شروع کرو تیزی سے اور طاقت سے مجھے چودو۔۔۔۔ اب میں نے پھر سوچا کہ اب میں عادل کو روک دوں ابھی یہ سوچ ہی رہا تھا کہ رابی نے اچانک اپنی گانڈ کو تھوڑا سا اوپر کیا جبکہ عادل کی طرف سے نیچے کو تھوڑا سا زور لگ گیا
میں حیرت سے عادل کے لن اور اپنی بیوی کی پھدی کی طرف دیکھنے لگا عادل کے لن کی ٹوپی میری بیوی کی پھدی کے اندر چلی گئی تھی میں حیرت سے اس طرف دیکھ رہاتھا جبکہ کیمرہ میرے ہاتھ میں پکڑا ہوا تھا اور اس کا رخ بھی اسی طرف تھا
مجھے چودو۔۔۔۔۔پلیز مجھے زور زور سے پوری طاقت سے چودو۔۔۔۔ رابی کی آواز میرے کانوں تک پہنچی
عادل نے میری طرف عاجزی سے دیکھا جیسے کہہ رہا ہو کہ اس میں میری کوئی غلطی نہیں ہے مگر اس نے اپنا لن اسی جگہ پر ساکت کررکھا تھا اس نے اس کو نکالا نہیں تھا میں بھی خاموشی سے اس کی طرف دیکھ رہا تھا
اس کو اور اندر کرو۔۔۔۔۔۔ پلیز شروع کرو‘ رابی کی آواز پھر کمرے میں گونجی جبکہ عادل میری طرف دیکھ رہا تھا اور میں اس کی طرف دیکھ رہا تھا کیمرے کی نظر صرف لن اور پھدی کے اوپر تھی اس میں مزید کوئی چیز بھی شوٹ نہیں ہورہی تھی عادل کے لن کی ٹوپی ابھی بھی اس کی پھدی کے اندر ہی تھا اس نے ابھی تک اس کو باہر نہیں نکالا تھا
کیا کررہے ہو ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔ شروع کرو ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔مجھے تنگ کیوں کررہے ہو‘ میرے کانوں میں پھر آواز گونج اٹھی
میرے ذہن میں اس وقت کشمکش شروع ہوگئی کہ کیا کروں اس کو روک دوں یا اجازت دے دوں
سوری یارررررررر۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔ اس میں میری کوئی غلطی نہیں ہے میں نے جان بوجھ کر ایسا نہیں کیا ۔۔۔۔اگر یہاں تک آگیا ہوں تو آگے بھی اجازت دے دو“عادل نے میری طرف عاجزانہ اور معذرت خواہانہ انداز میں دیکھتے ہوئے کہا
میں ابھی سوچ ہی رہا تھا کہ اس کو کیا کہوں کہ عادل نے میری خاموشی کو اجازت سمجھ لیا اور اس نے اپنی گردن گھما کر نظر رابی کی پھدی پر کی اور پھر اپنے لن کو اندر کی طرف دھکیل دیا اور اس کا لن میری بیوی کی پانی پانی پھدی کے اندر جڑ تک چلا گیا
آہ ہ ہ ہ ہ ہ ہ ہ۔۔۔۔۔۔۔۔رابی نے اپنا سانس اندر کی طرف کھینچتے ہوئے کہا
عادل نے اپنا لن باہر نکالااور پھر جھٹکوں سے اس کو اندر باہر کرنا شروع کردیا اس نے رابی کی ٹانگیں اپنے کندھوں پر رکھیں اور اس کو اپنی پوری طاقت کے ساتھ چودنا شروع کردیا میں حیرت زدہ آنکھوں سے اس کی طرف دیکھنے لگا جبکہ کیمرہ میرے ہاتھ میں پکڑا ہوا تھا اور شوٹنگ میں مصروف تھا اس دوران رابی کے کانوں سے ہیڈ فون تھوڑا باہر نکل آئے میں نے دیکھا تو فوری طورپر ہینڈی کیم کو پکڑے اس کی طرف لپکا اور عادل کو ایک لمحے کے لئے روک کر اس کی توجہ ہیڈ فونز کی طرف دلائی اس نے چدائی روک کر ہیڈ فون دوبارہ سے کانوں میں فٹ کئے جن میں سے اونچی آواز میں میوزک کی آواز آرہی تھی اور پھرسے چدائی شروع کردی پھر اس نے جھٹکے دینا بند کردیئے اور اپنا لن رابی کی پھدی کے اندر روک کر اس کے سینے پر اپنا منہ لے گیا اس نے اس کے ممے اپنے منہ میں لے کر چوسنا شروع کردیئے اور پھر چند منٹ بعد دوبارہ سے چدائی شروع کردی
اچانک میرے ذہن میں خیال آیا کہ عادل نے کنڈوم نہیں پہن رکھا
اوہ شٹ! عادل کو روکنا چاہئے ‘ میں ابھی اس کو روکنے کی سوچ ہی رہا تھا کہ اس نے ایک زور کا جھٹکا لیا اور اپنا پورا لن اس کی پھدی کے اندر ڈال کررک گیا اس نے اپنی آنکھیں بند کرلیں اور اس کے جسم نے ایک دو جھٹکے لئے اور پھر چند سیکنڈ کے بعد اس نے اپنا لن اس کی پھدی سے باہر نکال لیا میں نے دیکھا کہ اس کا لن ابھی نرم تھا
اوہ نوووووووو۔۔۔۔۔عادل میری بیوی کی پھدی میں ہی فارغ ہوگیا تھا میں خاموشی سے اس کی طرف دیکھ رہا تھا اس نے فوری طورپر اپنے کپڑے پہنے اور اٹھ کر مجھے گلے لگا لیا
تھینک یو ویری ویری مچ مائی ڈئیر فرینڈ یو آر سو گریٹ اینڈ یور وائف از ویری ویر ی ہاٹ ۔۔۔۔۔اٹ از موسٹ ونڈر فل نائٹ فار می ان مائی لائف ۔۔۔۔آئی ول ناٹ فارگیٹ یو اینڈ یور وائف اینڈدس نائٹ۔۔۔۔ وہ مجھ سے علیحدہ ہوا اور فوری طورپر کمرے سے باہر نکل گیا
میں نے اپنی بیوی کی طرف دیکھا جو اپنا جسم ڈھیلا چھوڑے بیڈ پر پڑی تھی اس کے ہاتھ پاﺅں اور آنکھیں بندھی ہوئی تھیں اور اس کی پھدی سے عادل کے لن سے نکلنے والا مادہ اور اس کا اپنا پانی مکسچر بن کر قطرہ قطرہ اس کی ٹانگوں سے بہتا ہوا باہر نکل رہا تھا میں نے کیمرہ الماری میں رکھا اور کمرے کی لائٹ آف کی اس کے بعد اس کی آنکھیں بازو اور ٹانگیں کھول دی
ویری انٹرسٹنگ‘ ویری ونڈر فل‘ آئی رئیلی انجوائے اٹ ‘ میری بیوی نے مجھے جپھی ڈالتے ہوئے کہا جس پر میں سوچنے لگا کہ اگر اس کو حقیقت معلوم ہوجائے تو یہ کیا سوچے گی تھوڑی دیر بعد وہ سو گئی لیکن میں ساری رات جاگتا رہا اور سوچتا رہا کہ یہ کیا ہوگیا ہے مجھے ایسا کرنا چاہئے تھا یا نہیں آخر میں نے یہ سوچا کہ اس کو ایک ڈراﺅنا خواب سمجھ کر بھول جانا ہی بہتر ہے میں نے سوچا کہ اگر رابی کو معلوم ہوگیا کہ میں نے اس طرح کیا ہے تو وہ مجھ سے ناراض ہوجائے گی جس کا میں کسی صورت بھی متحمل نہیں ہوسکتا کیوں کہ میں اس سے بہت محبت کرتا ہوں
اس سے اگلی رات ہم لوگ جب سیکس کررہے تھے اچانک رابی نے میرا لن اپنے منہ میں ڈال لیا اور اس کو چوسنا شروع کردیا حالانکہ اس سے پہلے وہ کبھی خود سے ایسا نہیں کرتی تھی میرے کہنے پر ہی وہ میرا لن اپنے منہ میں ڈالتی تھی اور تھوڑی دیر بعد ہی میرا لن اپنے منہ سے نکال دیتی تھی اس رات اس نے میرالن خود سے چوسنا شروع کیا اور اپنے منہ میں ہی اس کو فارغ کیا اور میری منی کا آخری قطرہ بھی اپنے منہ میں لے گئی
ندیم تمہاری منی کا ٹیسٹ کچھ تبدیل سا ہے کل ٹیسٹ کچھ اور تھا ‘ رابی نے میرا ڈھیلا لن اپنے منہ سے نکالتے ہوئے کہا
میرا دل زور زور سے دھڑکنے لگا اور میں چند لمحے خاموش رہا اور میں نے سوچا کہ اب اس کو بتا دینا ہی بہتر ہے
وہ اصل میں وہ ۔۔۔۔۔۔
مجھے معلوم ہے‘ تم کچھ نہ بتاﺅ تو بھی میں جان چکی ہوں‘ اس نے کہا تو میں جیسے زمین میں گڑ گیا ہوں میرے دل کی دھڑکن مزید تیز ہوگئی
تم کیا جانتی ہو‘ میں نے اس کو پوچھا
رابی مسکرائی اور کہنے لگی کہ کل جب لن میرے ساتھ لگا تو اس کی بناوٹ ایسی نہیں تھی جیسی تمہارے لن کی ہے وہ تھوڑا سا بڑا اور موٹا تھی تھا میں اس وقت تھوڑا کنفیوز ہوگئی تھی لیکن جب میں نے تمہارا لن اپنے منہ میں لیا تو میں سمجھ گئی کہ دال میں کچھ کالا ہے اس کی ٹوپی کافی موٹی تھی اور اس سے آنے والی بو بھی مختلف تھی جب مجھے یقین ہوگیا کہ یہ تم نہیں ہو تو میں پہلے تو ڈر گئی لیکن بعد میں سوچا کہ تم نے خودکیا ہے اور کچھ سوچ سمجھ کر پلان بنایا ہوگیا اور تم کو معلوم ہوگا کہ اس کے برے اور اچھے اثرات کیا ہوسکتے ہیں جس پر میں ریلیکس ہوگئی جس پر میں نے انجوائے کرنے کا سوچا اس وقت مجھے معلوم نہیں تھا کہ مجھے چودنے والا شخص کون ہے لیکن جو بھی تھا بہت اچھا تھا تم جانتے ہو کہ تم اور میں جب کرتے ہیں تو ایک ردھم سے کرتے ہیں لیکن جو یہ شخص تھا اس کے مجھے چودنے کے انداز سے لگا کہ یہ اناڑی ہے جو مجھے بہت اچھا لگا اور میں نے اس کو بہت انجوائے کیا ہے اس کے علاوہ تم نے میرے کانوں کو جو ہیڈ فون لگائے تھے وہ بہت ہی اچھا اور فول پروف آئیڈیا تھا لیکن ریڈیو پر چلنے والا گانا ایک لمحے کے لئے بند ہوگیا اور خاموشی چھا گئی تھی اور میرے کانوں میں سوررررررررری کی آواز بھی پڑی تھی جس سے مجھے معلوم ہوگیا کہ یہ عادل ہے جیسے ہی مجھے یہ معلوم ہوا کہ یہ عادل ہے تو میں ایک لمحے کے لئے خوف زدہ ہوگئی تھی لیکن بعد میں میرا خوف ختم ہوگیا کہ تم نے جو کیا ہے سوچ سمجھ کر کیا ہے جس پر میں نہیں چاہتی تھی کہ یہ مجھے چودنا رکے ‘ میں تمہارے پلان کی داد دیتی ہوں
یہ بہت ہی خوب صورت اور یادگار رات تھی تھینک یو۔۔۔۔تم نے مجھے رئیل میں ایک سرپرائز دیا ہے
مگر تم نے یہ نہیں سوچا کہ یہ بہت رسکی کام ہے کسی اور کو اپنی بیوی کو چودنے کی اجازت دینا اس نے کنڈوم بھی نہیں پہنا ہوا تھا مجھے یہ بتاﺅ کہ تم نے عادل کو کنڈوم پہننے کے لئے کیوں نہیں کہا یا مجھے ہی پہلے بتا دیتے میں کوئی گولی شولی کھا لیتی
آئندہ سے محتاط رہنا کسی بھی مرد کو اپنی بیوی کو چودنے کی اجازت دینے سے پہلے اس بات کو مدنظر رکھ لینا کہ اس نے کنڈوم پہنا ہوا ہے یا نہیں ۔ مجھے اندازہ نہیں تھا کہ تم اتنے لا پرواہ ہوسکتے ہو۔ اس نے موڈ بناتے ہوئے کہا کہ اس طرح کے سیکس سے صرف حمل کا ہی خطرہ نہیں ہوتا اور بھی کئی خطرناک بیماریاں لگ سکتی ہیں جن سے محتاط رہنا چاہئے اس لئے ڈارلنگ آئندہ سے محتاط رہنا کنڈوم کا خاص طورپر خیال رکھنا اچھا ہاں اور عادل کو یہ نہ بتانا کہ میں سب کچھ جان چکی ہوں کہ اس نے مجھے چودا ہے “ اس نے مجھ سے کہا
کیوں؟
ڈارلنگ مجھے اس سے شرم آئے گی اور برا لگے گا
شرم ؟
کم آن ڈارلنگ ابھی تک وہ صرف سوچ رہا ہوگا کہ صرف خاوند کو ہی معلوم ہے کہ اس کی بیوی اس سے چدی ہے اگر اس کو معلوم ہوگیا کہ میں بھی یہ سب کچھ جان چکی ہوں تو وہ مجھ سے فری ہونے کی بھی کوشش کرے گا جو مجھے پسند نہیں ہے اچھا اب مجھے یہ بتاﺅ کہ تم ابھی تک کتنے لوگوں کی بیویاں چود چکے ہو
کسی کی بھی نہیں
میں نہیں مانتی تم نے اتنا فول پروف پلان بنایا تھا کوئی اناڑی اس طرح نہیں سوچ سکتا ۔

No comments:

Post a Comment

LinkWithin

Related Posts Plugin for WordPress, Blogger...

Ratings and Recommendations by outbrain

Powered by Blogger.

Stories on Facebook